مادرِ ملت محترمہ فاطمہ جناحؒ کے یومِ پیدائش پر تقریب

مادرِ ملت محترمہ فاطمہ جناحؒ کے یومِ ولادت کے حوالے سے 26جولائی 2019ء کو نظریہ پاکستان کونسل میں منعقدہ تقریب کی پریس ریلیز اور تصاویرمادرِ ملت محترمہ فاطمہ جناحؒ کے یومِ ولادت کے حوالے سے 26جولائی 2019ء کونظریہپاکستان کونسل میں منعقدہ تقریب کی پریس ریلیز اور تصاویر

 

 

 

مادرِ ملت کردار و عمل ، عزم وہمت اور ایثار و قربانی کا استعارہ تھیں۔

پاکستانی خواتین کو اُن کے نقشِ قدم پر چل کر ملک کو مضبوط بناناہے۔

نظریہپاکستان کونسل کی تقریب میں سینیٹر رزینہ عالم خان اور دیگر کا خطاب

 

    اسلام آباد۔مادرِ ملت محترمہ فاطمہ جناح حسنِ کردار و عمل ، عزم وہمت، سیاسی سوجھ بوجھ، ایثار و قربانی اور سماجی وملی خدمات کے حوالے سے پاکستانی خواتین کے لئے ایک مثالیے یعنی رول ماڈل کی حیثیت رکھتی ہیں۔پاکستانی خواتین کو   مادرِ ملت کے نقشِ قدم پر چل کر ملک کو مضبوط اور مستحکم بنانا ہوگا۔ان خیالات کا اظہار محترمہ فاتمہ جناح کی ایک سو چھبیسویں سالگرہ کے حوالے سے نظریہ پاکستان کونسل کے تحت ایوانِ قائد میں فاطمہ جناح پارک میں خصوصی تقریب میں کیا گیا جس کی صدارت کونسل کی مجلسِ عاملہ کی سینئر رُکن سینیٹر رزینہ عالم خان نے کی۔ منیرہ جاوید مہمانِ خصوصی تھیں۔ تقریب کی نظامت معروف شاعرہ شازیہ اکبر نے کی۔ ان کے علاوہ مادرِ ملت کی زندگی اور شخصیت کے حوالے سے فرخندہ شمیم، شازیہ رئوف اور طالبہ سعیدہ مختار نے مختصر اظہارِ خیال کیا۔

مقررین نے یہ بات زور دیکر کہی کہ محترمہ فاطمہ جناح کی زندگی اول تا آخر ملی قربانی و ایثار کا نمونہ تھی۔ انہوں نے تحریکِ پاکستان کے بہت مشکل دنوں میں قائداعظمؒ کابھر پور ساتھ دیتے ہوئے برصغیر کی خواتین میں سیاسی بیداری کی لہر پیدا کی اور اس کے علاوہ بانی پاکستان کی طویل علالت کے دوران ایک بہن کی حیثیت میں بے لوث اورپُر خلوص تیمارداری اورخدمت کر کے اُن کا حوصلہ بڑھایا۔ اسی طرح قیامِ پاکستان کے بعد محترمہ نے لاکھوں بے گھر اور لُٹے پَٹے مہاجرین کی بحالی اور آبادکاری کے لئے دن رات اَن تھک کام کیا اور اس کے ساتھ ساتھ خواتین کے لئے تعلیم و تربیت کے متعدد مراکز قائم کر کے انہیں برسرِ روزگار بنانے میں اہم کردا ادا کیا۔وہ اعلیٰ تعلیم یافتہ خاتون تھیں مگر ذاتی رکھ رکھائو اور لباس میں انہیں مشرقی روایات اور اقدار کا ہمیشہ پاس رہا۔ محترمہ کی زندگی کا یہ پہلو بھی مثالی حیثیت کا حامل ہے کہ انہوں نے ہر قسم کے ذاتی مفاد سے بالا تر ہو کر ملک میں بحالی جمہوریت کے لئے خود کو میدان سیاست میں اتارا اور قائداعظمؒ کے زریں اصولوں کی پاسداری میں عملی حصہ لے کر خود کو تاریخِ پاکستان کا ایک ناقابلِ فراموش کردار بنا دیا جس کو ہر محبِ وطن پاکستانی ہمیشہ قدر اور تحسین کی نظر سے دیکھے گا۔

تقریب کے آخر میں محترمہ کی سالگرہ کے حوالے سے کیک بھی کاٹا گیا۔

    انجم خلیق      ڈائریکٹر میڈیا